khwab main mard sy jma ki Tabeer
khwab main mard sy jma ki Tabeer

Khwab mein Ghusal Karda Nahana Dekhnay Ki Tabeer

Online Khwab Nama. Our First Periority To Provide You A Correct And Exact Tabeer Of Every Dream.

Exact Tabeer Of Every Dream Are Available On Our Web.

http://www.haqsach.com

Here Tabeer Are taken By Yousaf Nama And We Also Give Tabeer By The Way Of Hadees.Hope You Read Today’s Tabeer Titel.So,Today We Discuss Tabeer About To See Harmer In Dream.Give Complete Tabeer In Urdu.

غسل کردن ( نہانا ): حضرت ابن سیرین ﷺ نے فرمایا ہے۔ اگر کوئی خواب میں دیکھے کہ اس نے دریا میں غسل کیا ہے ۔ دلیل ہے کہ اس کا غم واندوہ کم ہوگا ۔ اور اگر بیمار ہے تو شفاء اور صحت پاۓ گا ۔ اور اگر قرض دار ہے تو قرض سے سرخرو ہوگا ۔ اور خوف سے امن میں رہے گا اور اگر قیدی ہے تو خلاصی پاۓ گا ۔

اور اگر دیکھے کہ پانی سے تھوڑ انسل کیا ہے اور ہاتھ منہ دھویا ہے۔ تو دلیل ہے کہ خیر ومنفعت

پاۓ گا ۔ اور اگر دیکھے کہ ہاتھ کو پانی اور بھی سے دھویا ہے ۔ اگر دوست رکھتا ہے تو اس کی ان سے جدا ہونے پر دلیل ہے ۔ اور اگر دیکھے کہ اس نے غسل کیا ہے تو دلیل ہے کہ اس کا کام ختم ہوگا ۔ حضرت جابر مغربی ﷺ نے فرمایا ہے کہ خواب میں جنابت سے غسل کرنا دلیل ہے کہ جھوٹ سے پاک ہو گا اور جو زیادتی اور نقصان جنابت کے نسل سے ظاہر ہو گا تجوئے دین پر دلیل ہے ۔

Khwab ki tabeer, khwabo ki tabeer in urdr, khwab ki tabeer in urdr, khwabo ki tabeer, khwab tabeer in urdr, khwab nama, tabeer nama, khwab nama in urdu, khwab nama urdu, tabeer nama urdu, tabeer nama in urdu,free tabeer nama, Free tabeer nama in urdu, khwabo ki tabeer online, khwab ki tabeer online in Urdu, Khwab nama urdu online, Khwab ki tabeer by hadees, Online khwab ki tabeer in urdr, Online khwab ki tabeer urdu, online Khwabo ki tabeer in urdu free, Khwab ki tabeer In urdr, Yousaf Nama, khwab dekhna, khwab in Urdu, tabeer in urdr,khwab me Nahana,khwab me ghusal krna

Check Also

Merry Christmas means Urdu in Islam

Merry Christmas 🎄 کیا فرماتے ہیں علمائے کرام و مفتیان شرع متین اس مسئلے میں …

Ehsas Ham Qadam Program SMS 8123 Registration

Ehsas Ham Qadam SMS 8123 the government of the Punjab announced ehsas Ham ka dam …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *